امیچر سپورٹس اور جوڈو کے ساتھ منسلک خطرات کو کم کرنا

Posted on at

This post is also available in:

گزشتہ اتوار کو فلم انیکس نے نیویارک ایتھلٹس کلب کے ساتھ NY Judo کپ کو سپانسر کرنے کیلئے ساتھ دینا شروع کیا یہ ٹورنمنٹ امریکہ، جرمنی، فرانس اور کینیڈا کے مابین ہیں ۔ فرانس نے پہلی، جرمنی نے دوسری اور امریکہ کی تیسری پوزیشن آتی ۔ فلم انیکس دوسری جگہوں کی طرح افغانستان میں بھی کھیلوں کی سرگرمیوں کوفروغ دینے کی عرض سے استقلال فٹ بال ٹیم کو سپانسر کررہی ہے۔ یہ فلم انیکس کی رسک مینجیمنٹ اور ٹارگٹ Marketing کا حصہ ہے۔

Nike نے نیل آرمسٹرانگ پر انوسٹ کیا اور اپنے برانڈ کو خطرات سے دوچار کیا۔ یہ حال ہر سپانسر کا ہوتا کہ اس کو ایک نہ ایک سکینڈل کا سامنا کرنا پڑھتاہے۔

فلم انیکس کی تعداد اس کے 3 لاکھ منفرد لوگ ہیں جو اس کے لیے کام کرتےہیں۔ یہ دنیا بھر سے دیکھنے والوں کو اکٹھا کرتےہیں ۔ یہ اولمپکز کی بھی برائی ہے کہ اس میں ہزاروں لوگ ایک دوسرے سے سبقت لے جانے کیلئے میدان میں کھود جاتے ہیں ۔ مالی فوائد اس کا مقصد نہیں ہوتی بلکہ خواہش جیت اور کھیل میل سبقت لے جانی کے ہوتی ہیں۔ اولمپکز میں کئی مثبت ثابت ہوئے۔ مگر اولمپکز نے اپنی اساس کو قائم رکھا۔

.

 

Michael کا ارٹیکل جس کا عنوان “Target marketing + self sustaining” ہے کو پڑھیے۔

 

یہ سب فلم انیکس کی رسک منیجیمنٹ کے حوالے سے کاوشیں ہیں اس مضمون کو کپتان ایڈورڈ زیلم کی کتاب سے ماخوذ ایک ضرب المثل سے کرونگا۔

 

 

یا تخت است، یا تابوت
Yaa takht ast, yaa taaboot.  

Literal:  Either throne, or coffin.  

“It’s all or nothing.”



About the author

AFSalehi

A F Salehi graduated from Political Science department of International Relation Kateb University Kabul Afghanistan and has about more than 8 years of experience working in UN projects and Other International Organization Currently He is preparing for Master degree in one Swedish University.

Subscribe 201
160