منشی فتح دین

Posted on at


منشی فتح دین

منشی فتح دین بڑے فعال کارکن تھے۔لوگوں کی خدمت کا جزبہ انہیں ہمہ وقت حالت سفر میں رکھتا ہے۔ضہاں کسی مصیبت زدہ کی موجودگی کا علم ہوتا، وہاں جا پہنچتے اور ہر ممکن امداد مییا کر کے اس کا گم کم کرنے کی کوشش کرتے۔ ان کے پاس ایک خچر تھا جس پر سوار ہو کر وہ دن بھر سماجی خدمات انجام دینے کی خاطرادھر سے ادھر عازم سفر اور مصروف عمل دکھاہی دیتے۔ گرص دن بھر کا کوہی لمحہ ضائع نہ کرتے۔ فرصت کی ہر گھڑی کسی نہ کسی رفاہی کام کی نزر کر ڈالتے۔


ان کا ہمیشہ پابہ رکاب ہونا ایک صرب المثل بن گیا تھا، کیونکہ جب بھی ان کا پتہ پوچھا جاتا تو لوگ کہتے کہ (منشی فتح دین سکنہ بریشت خچر)۔۔۔
منشی فتح دین بڑی دلکش شخصیت کے مالک تھے۔ سر پر پگڑی رکھی ہوتی، کرتا اور تہبند دیب تن ہوتا، واسکٹ کے اوپر لمبا کوٹ پہنے ہویے یوں۔۔۔۔۔ وہ اپمے خچر پر سولر ہو کر صبح ہوتے ہی گھر سے نکا کھڑے ہوتے۔ کوٹ کی دونوں جیبوں کو پیسوں سے بھر لیتے، جن میں طلاہی ، نقری اور دھات کے ملے جلے سکے ہوتے



About the author

Khanbaba

Abdulbasit is the blogger and seo expert and made several blogs on Blogger Platform,and worked for several other bloggers. Eg: ehowbloggers etc. And now he is working on filmannex.. Abdulbasit is also ethical hacker and pen-tester. He has also done a job for different groups named as LOLSec 2,Pakistan cyber…

Subscribe 0
160