کھانے پینے کے آداب

Posted on at


کھانے سے پہلے اور بعد میں ہاتھ دھو لینے چاہیے۔کھانا کھانے کے بعد اگر کسی کے ہاتھ پر کھانے کی چکنائی لگی رہ جائے اور وہ سو جائے اور کوئی جانور اس کے ہاتھ پر کاٹ لے تو آپﷺنے فرمایا کہ ایسا اسی کی غلطی سے ہوا ہے اس کو اس پریشانی کے لیے اپنے آپ کو ہی ملامت کرنا چاہیے اور آپؐنے فرمایا کہ مسلمانوں کا ہر کام اللہ تعالیٰ کے نام سے شروع ہونا چاہیے۔ دنیا کے تمام کاموں میں کھانا جو زندگی کی بقاء اور جسم کے نظام کا اصلی ذریعہ ہے اس وجہ سے یہ کام اللہ کے نام کے بغیر شروع نہیں کرنا چاہیے اس لیے ہمیں چاہیے کے کھانا کھانے سے پہلے بسم اللہ ضرور پڑھیں۔                                                                                                    صحابہؓ کہتے ہیں کہ جب ہم کو رسول اکرمکے ساتھ کھانا کھانے کا اتفاق ہوتا تو جب تک آپﷺکھانا شروع نہ کرتے جب تک ہم لوگ کھانے میں ہاتھ نہیں ڈالتے تھے لیکن ایک با ایک بدو دوڑتا ہوا آیا اور کھانے میں ہاتھ ڈالنے لگا تو آپﷺنے اس کا ہاتھ پکڑ لیا پھر اسی طرح ایک لونڈی آئی اس نے بھی ایسا ہی کرنا چاہا تو آپﷺنے اس کا بھی ہاتھ پکڑ لیا اور فرمایا کہ جس کھانے پہ خدا کا نام نہیں لیا جاتا شیطان اس کو اپنے لیے جائز کر لیتا ہے۔ اگر کوئی شخص کھانا کھانے سے پہلے بسم اللہ پڑھنا بھول بھول جائے تو اور اس کو کھانے کے درمیان میں یاد آئے کہ اس نے بسم اللی نہیں پڑھی تو اس کو چاہیے کے اسی وقت بسم اللہ اولہ اخر پڑھ لے۔              


                       انسان کھانا کھاتے وقت یہ دھیان رکھے کہ کھانا ضائع نہ ہو۔ کھانا ہمیشہ برتن کے کنارے سے کھانا چاہیے درمیان میں سے نہیں کیونکہ اگر کھانا برتن میں بچ جائے تو وہ گندہ نہ ہو گا دوسرا یہ کہ سارا برتن کھنے سے گندہ نہیں یو گا ۔ اگر کوئی شخص جاہلوں کی طرح کھانا کھائے تو اس کے حریص ہونے کا پتہ چلتا ہے اور حریص آدمی کبھی سیر ہو کر کھانا ہیں کھاتا۔


اور انسان کو کبھی بھی کھانے میں عیب نہیں نکالنے چاہیے کیونکہ کہ اس سے آپس مہں چڑھ اور نفرت پیدا ہوتی ہے اور دوسرا یہ کہ گھر کے کام سدھرنے کے بجائے اور بگڑتے ہیں۔اس لیے اگر اتفاق سے کھانا بدمزہ پکا ہو تو اس میں کوئی عیب نکالے بغیر کھا لینا چاہیے اگر خواہش ہو تو ورنہ چھوڑ دینا چاہیے۔قرآن مجید میں اللہ تعالیٰ نے فرمایا ہے کہ کھانا الگ الگ بیٹھ کر کھانا بھی جائز ہے اور مل کر بھی لیکن مل کر کھانے میں آپﷺنے فرمایا کہ برکت ہوتی ہے اور اس طرح کھانا برباد نہیں ہوتا۔ کیونکہ کوئی تھوڑا کھانا کھاتا ہے اور کوئی زیادہ اس طرح سب مل کر برابر ہو جاتا ہے۔



About the author

160