ایکس مین ڈیز آف فیوچر پاسٹ ۔بین الاقوامی جنکٹ ۔۔ھفتہ ۱۰ مئی

Posted on at

This post is also available in:

ہاں، مجھے پتہ ہے کہ یہ بات اتنی نئی نہیں ہے۔ لیکن میں ریشئن کا سمو کے لئے ایک آرٹیکل کی تیاری میں بہت مصروف رہا ہوں یہ عجیب بات ہے لیکن روسی ماس بنڈز کے بارے میں بہت دیوانے ہیں۔ اور صرف اُسی کے بنیادی طور پر انہوں نے ہیوجیک مین۔ جیمز میک اُلوے۔ ایلن پیج پیٹر ڈنکیج اور پیٹرک سٹیورت کو میر ٹیکسٹ سے نکال پھینکا ہے اور صرف میخائل کو چھوڑا ہے۔ یہ حوالہ اور اے ٹی ٹی اٰین ہر کردار ایسے ادا کیا جیسا اس نے کہا جو کہ آج ماسکو میں۔ میرے خیال میں کاسمو کی منظوری پریس کانفرنس کیلئے نہیں ہوئی۔ اچھا نہیں ہوا۔ نیو یارک والے کے لیے۔

میں مخائل سے پہلے ہی سے دوسرے دفعہ بات چیت کر رہا تھا۔ اور آفیشل طور پر یہ دعٰوی کر تا ہےں کہ وہ ایکس مین کی تمام کاست سےزیادہ خوبصورت اور ذہین نہیں ہے۔ وہ اس طرح کا اداکار ہے جسے میں ایک فریم کہت ہون۔ آپ (یا اُپ کے کو لیگ) اُس سے جو بھی بات پو چھیں وہ کہے گا۔ وہ ایک مزہ کی بات تھی۔ ایک خوشی۔ مزہ اتنی حیرت انگیز۔ اتنا حیران کن تجربہ۔ اتنا بڑا اداکار میرے خیال میں یہ وہ جوابات ہیں جو پروڈیوسرز اور ٹیم کے ساتھ ڈسکس کئے گئے تھے۔ لیکن کچھ اداکار ہیں جو اگر چہ اپنی انفرادیت ظا ہر کرتے ہیں۔

 

مثال کے طور پر پیٹر ڈیکلینج کی بڑی مظبوط شخصیت ہے اور یہ اس کی اپنی رائے ہے۔ خیال مظبوط ہیں اور (اومائی گاڈ) وہ بہت زیادہ طنزیہ ہے۔ اور یہ ایک عظیم ذہانت کی نشانی ہے۔ یقیناً۔ میں آپ کو یہ فلم دیکنے کی حوصلہ افزائی کرتا ہوں۔ اور آپ یہ جان کہ حیران ہونگے کہ پیٹر اپنے کردار کو ولن نہیں سمجھتا۔ ولن کی تعریف کریں۔ وہ واقعی سمجھتا ہے کہ وہ صیح کام کر رہا ہے وہ انسانی نسل کو بچانا چاہتا ہے پوری دنیا کی۔ اور ویت نام کی جنگ کے وقت جو کہ تاریخی دنیا کی بد ترین جنگوں میں سے ایک ہے۔ وہ سمجھتا ہے کہ دنیا کو یکجا کرنے کا ایک موقع ہے۔ جنگ سے فائدہ اٹھانا ہی میرے لئے صیح بد ماشی ہے۔ سنٹرل پارک میں درخت پر ایک آدمی کراہ رہا ہے، وہ پاگل ہے اور میں یہ بات ایک نیو یارک کی شہری کی حیثیت سے لیتا ہوں لیکن کچھ لوگ وال سٹریٹ میں سوٹ پہنے ہوئے ہیں۔ یہ میرے لئے بدماشی ہے۔

جیمز میکاوے بھی مجھے صیح معنوں میں اچھا لگا۔ نوجوان اور زیادہ تجربہ کار (ایکس مین) کی کاسٹ میں ایک طرح کا مقابلہ ہے اور وہ ایک دوسرے کا مذاق اڑاتے ہیں۔ لیکن جیمز ہمیشہ فتح یاب ہوتا ہے۔

پیٹرک سٹیورٹ: میں واقعی پیچھے جانا چاہتا ہوں اور تمام فلموں کی شوٹنگ دوبارہ کرنا چاہتا ہوں۔ اب جبکہ مجھے بالکل ٹھیک طریقے سے پتہ ہے کہ میں کہاں سے آیا ہوں اور میں کیا تھا میں جیمز میکاوے سے اسی پرفارمنس میں بہت کچھ کروا سکتا ہوں۔

جیمز: ہر دن کو اپنے الگ جیمز میکاوے کی ضرورت ہوتی ہے۔ میں نہیں جانتا آپ کیوں ہنس رہے ہیں۔

پھر بھی پیٹرک اور جیمز نے ایک دوسرے کا سامنے سین میں بہت شاندار کام کیا یہ ایک گفتگو تھی پروفیسر ایکس اور اس کے ماضی کے نوجوان ہمزاد کے درمیان۔

پیٹرک: تم اپنی آنکھیں ڈال کر بول رہے ہو۔ یہ جیمز کا فلم میں پہلا دن تھا اور میرا یہ فلموں میں کام کا آخری دن تھا۔ میرا سامان باندھا گیا تھا میں وہ لے جانے کیلئے تیار تھا مجھے اس کی ریہر سل ساتھ نہیں۔ آپ کو لائنیں یاد ہیں اور انھوں نے کیمرہ گھمایا۔ یہ چالیس منٹ کا کام تھا اور یہی کچھ مجھے یاد ہے۔ مجھے یہ نہیں کہنا چاہیے تھا۔ مجھے کہنا چاہیے تھا کہ ہم نے اس پرہفتوں کام کیا

 

ہیو جیک میں (وولورائن) میں اتنا گُم ہے کہ اس میں اس نے اپنی نوجوانی کا کِردار بھی خود کیا۔ ایک باس کی طرح۔ وولورائن ۷۰ کی دہائی میں مکمل ہے اور میرے خیال میں وولورائن کبھی اِس دور کو چھوڑ نہیں سکتا۔ بال چھوٹے گوشت کی چاپس۔ کیڑے۔ میرا مطلب ہے ٹیئرز فار فییر(خوفناک آنسو) فلاک آف سِی گلز کا وقت۔ یہ سب اُس کے ساتھ آیا۔

میں ایلن پیج کے بارے میں بھی بتانا چاہتا ہوں۔ وہ صحافیوں سے بات چیت میں زیادہ پر جوش نہیں ہوتی۔ لکین اس کی ضرورت بھی نہیں ہے۔ وہ ایک اچھی اداکارہ ہے۔ اور میرا یہی خیال ہے۔

مجھے واقعی امید ہے کہ ایوارڈز (ایکس مین) کے کم تجربہ کار اداکاروں کو ملیں گے: ڈیز آف فیوچر پاسٹ۔ سی آئی ایس وہ بہت زبردست ہیں۔

 



About the author

syedahmad

My name is Syed Ahmad.I am a free Lancer. I have worked in different fields like {administration,Finance,Accounts,Procurement,Marketing,And HR}.It was my wish to do some thing for women education and women empowerment .Now i am a part of a good team which is working hard for this purpose..

Subscribe 3477
160