لوگوں کو قتل کرنا بہادری ہے

Posted on at


کل رات میں نے ٹی وی لگائی کہ شاید آج کوئی اچھی نیوز آئی ہو گی- جیسے ہی میں چینل چینج کرنے لگی تو میں نے ایک نیوز سنی جس کو سن کر میں بہت حیران ہوئی اور بہت خوفزدہ بھی- یہ نیوز لڑکی کے قتل کے بارے میں تھی جو لاہور کی رہنے والے تھی- لاہور جو پاکستان کا دوسرا بڑا شہر ہے- اس لڑکی کو اس کے شوہر نے مارا تھا وہ بھی شک  کی بنا پر کہ اس کی بیوی کا چکر اس کے کسی کزن کے ساتھ ہے- اس کے شوہر نے اسے کلھاڑی سے مارا- میں یہ ساری کہانی دیکھ کر بہت حیران ہوئی اور پریشان بھی- میں نے سوچا کہ کتنی لڑکیاں اپنے شوہر سے قتل ہوتی ہے وہ  بھی شک  کی بنا پر- کسی جگہ زمینی تنازعے  ہیں  اور کسی جگہ محبت کی وجہ سے قتل ہو رہےہیں-

 

اسنان کے اندر سے شعور اور عقل ختم ہو چکی ہے- اس کو ذرا خوف نہیں اتا کسی کا قتل کرتے وقت- انسان انسان کا دشمن بن چکا ہے-  لوگوں کا قتل ہونا بہت پھیلتا جا رہا ہے خاص طور پر انڈیا اور پاکستان میں- پاکستان ایک ایسا ملک ہے جس میں لوگوں کے اپنے اپنے قانون اور قاعدے ہے- کوئی کسی اور کی نہیں سنتا- یہاں کے مرد اپنی بیٹیوں، بہنوں، بیویوں پر اچھے سے سختی کرتے ہیں  اور اپنے بیٹوں کو کچھ نہیں کہتے-  اور اگر ان کی بیٹیاں بہنیں یا بیویاں ان کا کوئی قانون توڑ دے تو انھے موت کی سزا ملتی ہے جیسے وہ یہ کہہ  دے کہ میں نے ابھی شادی نہیں کرنی، کسی اور سے شادی کرنی ہے یا پھر شک کی بنا پر انہیں مار دیتے ہیں-

 

اس سال اور پچھلے سال قتل کرنا ٣٠% اور پھیلا ہے- اور اس کے علاوہ تیس ہزار لڑکیوں کا قتل ہوا ہے ٨٠% لڑکیاں اس وجہ سے قتل ہوئی ہے کہ انہوں نے اپنی شادی پسند سے کی تھی جس کی وجہ سے ان کے باپ اور رشتہداروں نے ان کا قتل کر دیا- غلطی صرف ماں باپ کی ہی نہیں ہوتی بلکے اولاد کی بھی ہوتی ہے جو اپنے ماں باپ کے جذبات کو سمجھ نہیں سکتے- کوئی بھی ماں باپ اپنے بچوں کے لئے غلط نہیں سوچتے- لیکن بہت سی جگاہوں پر لڑکیوں کو بے گناہ بھی مارا جاتا ہے-  لڑکیاں آج لڑکوں سے بھی آگے ہے  لیکن ہمارے ملک کے کئی جگاہوں پر یہ صرف غلام ہیں-

  



About the author

rabia-ali

I am Kasi kasandra From United states & doing work on filmannex

Subscribe 0
160