پاکستان میں کوایجو کشن ایک بڑا مسئلہ

Posted on at


پاکستان میں کوایجو کشن معاشرے کے لئے ایک بڑا مسئلہ ہے ۔ کچھ لوگوں کے  خیال میں یہ درست ہے اور کچھ کو  لگتا ہے کہ ہمارے نوجوانوں کے لتے یہ درست نہیں  ۔ یہاں میں یہ اس نظام تعلیم جوکہ ہمارے بچوں کے لئے اپنانے یا نہ اپنانے کے لئے غلط ہے  وضاحت کرنے کی کوشش کریں گے ۔ یہ بھی بتاتے ہیں کہ اس نظام تعلیم کے خلاف اور اس نظام سے حق اٹھایا جا رہا ہیں وضاحت کر دوں گا ۔




پاکستان میںکچھ   لوگوں  کوایجو کشن  کے حق  میں ہیں جو تقریبا کل آبادی کا 10 فیصد  ہیں اشرافیہ طبقے کےسے  تعلق رکھتے ہیں ۔ جیسا کہ پاکستان ایک غریب ملک ہے تو ہم بڑی یونیورسٹیوں اور لیبارٹریوں اور دیگر چیزیں لڑکوں اور لڑکیوں کے لیے علیحدہ علیحدہ نہیں دے سکتے ہیں کیونکہ اس سے ہماری معیشت پر بوجھ ہو جائے گا ۔
یہاں تک کہ اگر لوگ اپنے بیٹوں کو  تعلیم حاصل کرنے کی اجازت دے دیتے ہیں تو  دوسری جانب تقریبا 90 فی صد آبادی پاکستان میں ان بچوں کی ہے جن  بچوں کو کوایجوکشن میں پڑھنے کے لیے اجازت نہیں جبکہ کوایجو کشن  سے وہ کبھی اپنی بیٹیوں کو تعلیم کے اس وضع میں مطالعہ کرنے دیں گے، بلکہ وہ اپنی بیٹیوں کو کوایجوکشن میں تعلیم حاصل کرنے کی نسبت گھر میں رہنے کے لئے انتخاب کریں گے ۔



 


یہاں پاکستان میں زیادہ تر یونیورسٹیوں  لڑکوں اور لڑکیوں کے لیے علیحدہ لیبارٹریوں اور دوسری چیزوں  کے لئے کر رہے ہیں ۔  کچھ  والدین اور معاشرہ ان یونیورسٹیوں میں اعلیٰ تعلیم کے لئے جانے کی اجازت نہیںدیتے جو کو ایجو کشن دتے ہیں .  پاکستان میں اگر  ہم دکھیں تو اتنی  زیادہ ناخواندہ خواتینہیں اوراگر ہیں تو وہ  ویسے ہی انتہائی کم تعلیم یافتہ خواتین  ہے . لوگ کوایجو کشن کے بارے میں کہتے ہیں یہ ان کی جوانیخراب  کرے گا، لیکن مجھے لگتا ہے کہ بچوں کو صحیح رہنمائی دیجایے  تو وہ کبھی  کچھ غلط نہیں کرتیں.
 ہمیں   اپنی بیٹیوں اور بہنوںکو تعلیم یافتہ  بنانا چاہیے کیونکہ  ایک تعلیم یافتہ خواتین اپنے بچوں کے لئے بہتر ماں ہو جائے ۔




About the author

abrar007

one thing is only . don't follow the majority follow the right way.

Subscribe 1370
160