پاکستان کے چار موسم

Posted on at


بہار،
ہر موسم کا اپنا ہی مزہ ہوتا ہے مگر بہار ،کے موسم میں ہر چیز نے تارو تزو ہر طرف سبز لہلھتے کھیت ،خوبصورت پھولوں سے سجے باغات،دل کو لوبتے ہیں،مٹھی مٹھی دھوپ مزہ دیتی ہے ،پرندے خوشی خوشی کے گیت گاتے نظر اتے ہیں ،بہار کا موسم سب کو بوہت ہی اچھے و پیارا لگتا ہے،           

                             

خزاں -
خزاں کا موسم بی بوہت ہے پیارا ہوتا ہے جب درختوں سے پتے جھاڑتے ہیں تو ایسا لگتا ہے جیسے زمین پر کسی نے پیلی گلابی رنگ کی قالین بچا دی ہو ،اس موسم کو بی لوگ برا پسند کرتے ہیں ،         

                                    

سردی-
سردی کے موسم کی تو کیا بات ہے ،اس موسم میں لوگ گھروں میں پکوڑے ،مچھلیاں ،کباب ،سوپ اور بوہت سی چیزوں کا مزہ لٹے ہیں ،کی لوگ تو اس موسم میں برف باری دیکھنے مری نتھیا گلی ،ناران ،کاغان،سوات،وغیرو کا رخ کر لٹے ہیں اور سردی کے اس موسم کو برا انجونے کرتے ہیں ،سردیوں میں حلوے کا تو جواب ہے نہیں ہر گھر میں تقریباً گاجر کا حلوہ ضرور پکاتے ہیں،اور جب بارش ہو تو آگ جلا کر اس کے پاس بیٹھ جاتے ہیں اور سردی کا مزہ لٹے ہیں، کی لوگ ہاتھ میں کوفی لے کر مچ دیکھنا بی پسند کرتے ہیں،ساتھ ساتھ کوفی پیتے ہیں اور میچ کا مزہ لٹے ہیں،               

                                   

گرمی -
یہ موسم تو بوہت کم لوگوں کو پسند ہے کیوں کہ اس موسم میں بیماریاں اور ہارٹ اٹیک کا حملہ زیادہ ہوتا ہے ،اور مچھر مکھیاں ،نے تو ناک میں دم کر رکھا ہوتا ہے ،اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا تو جواب ہے نہیں ،ایک بار بجلی چلی جائے تو پتا نہیں ہوتا کب آییھگی بی یا نہیں بس ہر کوئی بجلی کو ہے دیکھتا رہتا ہے کب ایگی ،لیکن اس موسم میں کہی لوگ مزہ بی لٹے ہیں کیی لوگ موٹر سائیکل پر ڈرائیو کر کے ٹھنڈی جگوں کا رخ کرتے ہیں کہیی لوگ نہانے دریاؤ کا رخ کرتے ہیں،گرمی کے موسم میں ٹھنڈے مشروبات کا استمال زیادہ سے زیادہ کرتے ہیں ،جیسے الو بخارے عملی کر شربت جوس وغیرو             

                                  

اللہ نے ہمارے ملک پاکستان کو ہے یہ چار موسم ،گرمی،سردی،بہار ،خزاں سے نوازا ہے ،حالانکہ دوسرے ملکوں میں سارا سال یا تو گرمی ہے رہتی ہے یہ سردی ،مسلان یورپ ممالک میں سارا سال سردی رہتی ہے جیسے انگلینڈ ،امیرکا .ڈنمارک اور کی ممالک ایسے ہیں جہاں سارا سال گرمی ہی رہتی ہے ،جیسے دبئی ،    سعودی عربیہ ،                   

ہم اللہ کا جتنا سکڑ ادا کریں وو کم ہے کیوں کہ اللہ نے ہمیں اپنی نعمتوں میں سے ایک بوہت بڑی نعمت سے ہمیں نوازا ہے ،



About the author

abid-khan

I am Abid Khan. I am currently studying at 11th Grade and I love to make short movies and write blogs. Subscribe me to see more from me.

Subscribe 8680
160